تازہ ترین
چلاس۔ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ پی پی ایچ آئی کی طرف سے بابوسر روڈ پر تعینات مقامی رضاکار فورس کے جوانوں کو طبعی امداد کا سامان حوالہ کررہے ہیں ۔ تصویر عمر فاروق فاروقی

چلاس:بابوسر روڈپر شام ۶ بجے کے بعد سیاحوں اور مسافروں کیلئے سفری پابندی علاقے کو بدنام کرنے کی سازش ہے ، سیف اللہ

چلاس : پھسوٹائمزاُردُو : بیورو رپورٹ

چلاس :  پیپلز پارٹی ضلع دیامر کے سینئر نائب صدرسیف اللہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ بابوسر روڈپر شام ۶ بجے کے بعد سیاحوں اور مسافروں کیلئے سفری پابندی علاقے کو بدنام کرنے کی سازش ہے،انہوں نے کہا کہ تھک بابوسر ایک پرامن علاقہ ہے اور وہاں کے لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت روڈ کو محفوظ بنانے کیلئے قومی رضاکار فورس بھی تشکیل دیا ہے جو دن رات سیاحوں کی حفاظت اور مسافروں کی مدد کیلئے کوشاں ہیں ،لین ضلعی انتظامیہ کی جانب سے روڈ کو بند رکھنا سمجھ سے بالا تر ہے۔انہوں نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ علاقے کو بدنام کرنیکی کوشیش نہ کرے اور فوری طور پر روڈ کو 24گھنٹے ہر قسم کی ٹریفک کیلئے کھول دیا جائے،تاکہ سیاح باآسانی سے بابوسر روڈ پر سفر کرسکیں ۔انہوں نے کہا کہ بابوسر روڈ پر ضلعی انتظامیہ سیکورٹی کو مزید مظبوط کرے اور مسافروں کی تحفظ کو یقینی بنائیں ،روڈ کو بند رکھنا اور بڑی گاڑیوں کی آمدورفت پر پابندی علاقے کے مفاد میں نہیں ہے ،اس طرح کے ٖغلط فیصلوں سے پولیس کی کارکردگی پر سوال اُٹھیں گے اور ضلعی انتظامیہ کی کارکردگی بھی مشکوک ہوگی۔انہوں نے چیف سیکرٹری اور فروس کمانڈر سے اپیل کی ہے کہ وہ نوٹس لیکر بابوسر روڈ کو 24 گھنٹے ہر قسم کی ٹریفک کیلئے کھولنے کے احکامات جاری کریں ۔

About Passu Times

ایک تبصرہ

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

error: Content is protected !!